ورلڈ ونڈ انرجی ڈوولپمنٹ

اس وقت ونڈ انرجی تیزی سے بڑھتی ہوئی قابل تجدید توانائی کی ٹیکنالوجی ہے۔ بڑے پیمانے پر یہ سمجھا جاتا ہے کہ یہ کاربن کے اخراج میں کمی کا باعث بنے گی۔ عنقریب ونڈ انرجی ایک اہم انرجی مارکیٹ کی صورت اختیار کر لے گی۔ گزشتہ اندازے کے مطابق 2008 میں اس مارکیٹ کی حیثیت تقریباً 240 بلین ڈالر ہو گی اور سال 2009 میں اس سیکٹر میں چار لاکھ لوگ کام کر رہے ہوں گے۔ ونڈ انرجی پائیدار ٹیکنالوجی کو استعمال کرتی ہے۔ ونڈ انرجی ہوا جیسے وسائل سے مستفید ہوتی ہے۔ تقریباً بہتر ٹیراواٹ کے ہوائی وسائل موجود ہیں جو کہ عالمی توانائی کی طلب سے پینتیس گنا زیادہ ہیں۔ محدود مالی وسائل کی بنا پر ایک حد تک ان وسائل کو بروئےکار لایا جا سکتا ہے۔ اندازً عالمی سطح پر سالانہ 39000 ٹیراواٹ آور ہوائی وسائل بروئےکار لائے جا سکتے ہیں جو کہ 2008 میں عالمی توانائی کی طلب سےدو گنا زیادہ ہے۔ ۲۰۰۸ کے آخر میں ونڈ انرجی کی پیداوار 120.8گیگا واٹ تک جا پہنچی تھی جس کی صلاحیت سالانہ 260 ٹیراواٹ آور بڑھنے کی توقع کی جاتی ہے۔ ونڈ انرجی عالمی طور پر فی الحال تیزی سے بڑھتی ہوئی بجلی کی پیداوار کی ٹیکنالوجی ہے اور یہ پیداوار گزشتہ پانچ سالوں سے تقریباً سالانہ 27.6 فیصد کی اوسط سے بڑھ رہی ہے۔

گزشتہ دہائی کے دوران عالمی سطح پر ہوا کی صلاحیت کی ترقی

Global-Cumulative-Installed-Wind-Capacity-1997-2014